حیدرآباد میں بھی اسمارٹ لاک ڈاؤن کا فیصلہ، نوٹیفکیشن جاری

حیدر آباد (ویب ڈیسک) حیدرآباد میں بھی اسمارٹ لاک ڈاؤن کے لیے نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے۔ حیدرآباد کے ڈپٹی کمشنر فواد غفار سومرو کے مطابق حیدرآباد کے 90 سے زائد علاقوں میں 19 جون سے 2 جولائی تک 14 روز کا لاک ڈاؤن کیا جائے گا۔ جاری نوٹیفکیشن کے مطابق

لاک ڈاؤن کا اطلاق 19 جون کی صبح 9 بجے سے شروع ہوگا، اسمارٹ لاک ڈاؤن کے نفاذ کو پولیس، رینجرز اور متعلقہ اسسٹنٹ کمشنر یقینی بنائیں گے۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران کسی بھی شخص کو فیس ماسک کے بغیر گھر سے نکلنے کی اجازت نہیں ہوگی، لاک ڈاؤن کے حامل علاقوں میں داخلہ یا اخراج کی اجازت بھی نہیں ہوگی۔ لاک ڈاؤن کے حامل علاقوں میں تمام ریسٹورنٹس، شاپنگ مالز، مارکیٹس اور دفاتر بھی بند رہیں گے، میڈیکل اسٹورز 24 گھنٹے جب کہ دیگر دکانیں صبح 7 سے دوپہر 2 بجے تک کھولی جا سکیں گی۔ شاہراہ فاطمہ جناح پر واقع بینک کی ریجنل برانچ میں ایک افسر میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جس کے بعد عملے کے درجنوں دیگر افراد کو بھی قرنطینہ میں داخل کرا دیا گیا۔ ذرائع محکمہ صحت کا بتانا ہے کہ بینک کے عملے میں شامل 65 افراد کو نجی اسپتال میں قرنطینہ کر دیا گیا ہے، بینک عملے کے 65 افراد کے سیمپلز آج لیے جائیں گے۔ ذرائع کا بتانا ہے کہ 29 مارچ کو بینک کے ایک افسر میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی، بینک افسر میں کورونا وائرس سامنے آنے پر 30 مارچ سے بینک بند کر دیا گیا تھا۔ خیال رہے کہ اس سے قبل حیدر آباد میں تبلیغی جماعت میں شامل ایک چینی باشندے میں بھی کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی تھی جس کے بعد جماعت میں شامل دیگر 210 افراد کو بھی قرنطینہ کر دیا گیا تھا۔ پاکستان میں کورونا وائرس کے باعث اب تک 2049 کیسز اور 26 ہلاکتیں ہو چکی ہیں۔
Article Source: Hassan Nisar

50% LikesVS
50% Dislikes